21

مری سے سیاح واپس، زندگی معمول پر نہ آسکی

مری : مری میں برفانی طوفان کے بعد بھی زندگی معمول پر نہیں آئی۔ دھوپ تو نکل آئی مگر موسم بدستور سرد ہے۔ پانی، بجلی کی فراہمی مکمل طور پر بحال نہ ہوسکی۔ موبائل فون سروس بھی متاثر ہے۔ مری میں پھنسے سیاحوں کی بڑی تعداد واپس چلی گئی ہے۔

نیو نیوز کے مطابق مری اور قریبی علاقوں کی مرکزی شاہراہوں پر گزشتہ روزسے ٹریفک بحال ہے تاہم دیہی علاقوں کوجانے والی تمام سڑکیں بند ہیں، مقامی شہریوں کو شدید دشواری کا سامنا ہے۔

نواحی علاقوں کی سڑکوں پر بدستور کئی گاڑیاں برف سے ڈھکی ہوئی کھڑی ہیں جبکہ شہر میں بجلی کا نظام شدید متاثر ہے، 5دن میں سے چند ہی گھنٹے بجلی فراہم کی جاسکی ہے، دیہی علاقوں میں تو بجلی 5 دن سے معطل ہے۔
مری اور گردونواح کے علاقوں میں پائپ لائنوں میں پانی جم جانے سے شہر میں پانی کی بھی شدید قلت ہے ، شہر کے بیشتر ہوٹل خالی ہوچکے ہیں، سیاحوں کی بڑی تعداد واپس جاچکی ہے
واضح رہے کہ تین دن پہلے برفانوی طوفان کے باعث ہزاروں سیاح مری میں پھنس گئے تھے۔ راستے کلیئر نہ ہونے کی وجہ سے سڑک پر پھنسی گاڑیوں میں گیس بھرنے سے 23 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔ واقعہ کی تحقیقات کے لیے حکومت کی طرف سے کمیٹی بھی بنادی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں