32

کور کمانڈرز کانفرنس میں سانحہ سیالکوٹ کا نوٹس

راولپنڈی: کور کمانڈر کانفرنس نے دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف زیرو ٹالرنس کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نے کہا ہے کہ سانحہ سیالکوٹ افسوسناک واقعہ ہے. ایسے عناصر کے خلاف کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی زیر صدارت دو روزہ کور کمانڈرز کانفرنس منعقد ہوئی، جنرل ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی میں ہونے والی 245 ویں کور کمانڈر کانفرنس میں عالمی، علاقائی اور ڈومیسٹک سیکیورٹی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

آرمی چیف نے سرحدوں پر کئے گئے سیکیورٹی انتظامات پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کسی بھی خطرے سے نمٹنے کے لئے تیار رہنے پر زور دیا، جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ افغانستان میں انسانی المیے سے بچنے کیلئے عالمی تعاون کی ضرورت ہے، افغانستان میں امن واستحکام کیلئے عالمی تعاون جاری رہنا چاہیے، کیونکہ افغانستان میں استحکام سے خطے میں استحکام آئے گا۔
جنرل قمر جاوید باجوہ نے فوج کی تربیتی سرگرمیوں پر بھی اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جاری تربیتی عمل اور ڈاکٹرائن کے جائزے سے کسی بھی ابھرتے ہوئے چیلنج سے نمٹنے میں مدد ملتی ہے، مستقبل کے میدان جنگ میں ٹینکالوجی پر انحصار بڑھ رہا ہے۔

کانفرنس کے شرکاء نے سیالکوٹ میں سری لنکن شہری کے قتل کے واقعے کا بھی نوٹس لیا، شرکاء نے ایسے عناصر کے خلاف کوئی سمجھوتہ نہ کرنے کا اعادہ کیا اور کہا کہ ایسے واقعات کسی صورت برداشت نہیں کئے جائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں