32

وزیراعظم اور عالمی رہنماؤں کے درمیان افغانستان کی صورتحال پر رابطے

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان اور عالمی رہنماؤں کے درمیان افغانستان کی صورتحال پر رابطے شروع ہوگئے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کو برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے ٹیلیفون کیا جس میں دونوں رہنماؤں نے افغانستان کی موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔

وزیراعظم عمران خان نے پاکستان کے لیے پرامن اور مستحکم افغانستان کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ تمام افغانوں کے تحفظ، سلامتی اور حقوق کا احترام یقینی بنانا انتہائی اہم ہے۔
وزیراعظم نے افغانستان میں ایک جامع سیاسی تصفیے کی اہمیت پر بھی زور دیا، انہوں نے افغانستان سے سفارتی، بین الاقوامی اداروں کے عملے اور دیگر افراد کے انخلاء میں پاکستان کے مثبت کردار کو اجاگر کیا، دونوں وزرائے اعظم کا افغانستان میں ابھرتی ہوئی صورتحال کے پیش نظر رابطہ میں رہنے پر اتفاق کیا۔

وزیر اعظم نے پاکستان کی کورونا پر قابو پانے کے لیے اقدامات سے بھی آگاہ کیا، کوویڈ سے متعلق ڈیٹا برطانیہ کے ساتھ شیئر کیا گیا ہے جب کہ برطانیہ سے پاکستان کوریڈ لسٹ سے نکالنے کا مطالبہ بھی کیا گیا۔

دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے ڈنمارک کی وزیراعظم سے ٹیلیفونک رابطہ کیا اور ان سے افغانستان کی موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔ وزیراعظم نے افغانستان سے سفارت کاروں، عالمی اداروں کے عملے کی بحفاظت واپسی کے لیے پاکستان کی کوششوں پر روشنی ڈالی۔

سرکاری اعلامیے کے مطابق ڈنمارک کی وزیراعظم نے کابل میں پاکستان کی کوششوں اور مدد کی تعریف کی۔ وزیراعظم عمران خان نے تمام افغانوں کے حقوق کے تحفظ کے ساتھ ساتھ حفاظت کو یقینی بنانے کی اہمیت پر زور دیا۔ وزیر اعظم عمران خان نے ایک جامع سیاسی تصفیے پر کام کرنے کی اہمیت پر بھی بات کی۔

قبل ازیں وزیر اعظم عمران خان ترک صدر رجب طیب اردگان سے رابطہ کرچکے ہیں اور کل وہ جرمن چانسلر انجیلا مرکل سے بھی رابطہ کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں