42

حکومت کے صحافیوں کو سیکورٹی دینے کی نیت نہیں ہے، شازیہ مری

پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما شازیہ مری کا کہنا ہے کہ حکومت کے صحافیوں کو سیکورٹی دینے کی نیت نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما شازیہ مری نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ صحافیوں کی سیکورٹی کی حوالے سے پاکستان میں خوش خبری نہیں ہے۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ اگر کوئی خوش خبری دیکھانا چاہتا ہے وہ گوبلز ہی ہو سکتا ہے، بلاول بھٹو نے انسانی حقوق کمیٹی اجلاس میں صحافیوں کو بلایا ہے۔
شازیہ مری نے مزید کہا کہ مطیع اللہ جان نے بتایا کہ انکے کیس میں کوئی پیش رفت نہیں، انھیں سی سی ٹی وی فوٹیج آج تک نہیں دی گئی، اسد طور پر حملے کی سی سی ٹی وی فوٹیج میں تو شکل بھی واضح ہے، اسد طور کے وکلا نے انکشاف کیا کہ انھیں لوگ فالو کررہے ہیں، انھیں کیس کی پیروی سے روک رہے ہیں۔
انہوں نے مزید یہ بھی کہا کہ ہمارے تحفظات تھے کہ پیکا کا قانون لوگوں کو حراساں کرنے استعمال ہوگا، آج جو لوگ اپ کو اچھے نہیں لگتے تو آپ ان پر (پی ئی سی اے) کے تحت غداری کا مقدمہ قائم کردیتے ہیں۔
پاکستان پیپلز پارٹی کی رہنما شازیہ مری نے مزید یہ بھی کہا کہ کوئی اصل حقائق بیان کررہا ہے تو وہ غدار نہیں، پہلے ہمیں معلوم ہوتا تھا کہ کس نے حملہ کیا ہے، اب صاف چھپتے بھی نہیں اور سامنے آتے بھی نہیں، اسد طور نے حملے میں ایک ایجنسی کا نام لیا، اگر کوئی ہے تو وہ ایجنسی کو بدنام کررہا ہے، اگر ایسا درست نہیں تو ہم اسد طور کو غلط ثابت کریں کہ ایجنسی ملوث نہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں