52

شفقت حسین: ’خدا کا شکر ہے کہ اس نے سنبل کی موت کے بعد بھی اس کا خیال رکھنے کی توفیق دی‘

کسی شخص کے ساتھ رفاقت کو ہمیشہ کے لیے قائم رکھنا ہمارے بس میں نہیں لیکن اُن کے خوابوں کو زندہ رکھنا ہمارے بس میں ہے۔ شفقت حسین اپنی اہلیہ سنبل کا عمر بھر ساتھ تو نہ دے پائے لیکن انھوں نے ٹھان لیا کہ وہ سنبل کی ہر خواہش اور خواب کو پورا کریں گے۔

شفقت کا تعلق صوبہ سندھ کے شہر پنو عاقل سے ہے اور انھوں نے اپنی یونیورسٹی کی تعلیم اسلام آباد سے حاصل کی ہے۔ وہ اسلام آباد کے ایک جم میں بطور ٹرینر کام کرتے ہیں۔ ان کی سنبل سے پہلی ملاقات سنہ 2017 میں اس وقت ہوئی جب شفقت کے والدین اُن کا رشتہ دیکھنے گئے۔

’مجھے سنبل سے پہلی نظر میں ہی پیار ہو گیا تھا۔ جب میں نے پہلی بار اسے دیکھا تو مجھے لگا کہ میں آج سے پہلے تک ادھورا تھا اور اب میں ہمیشہ کے لیے مکمل ہو جاؤں گا۔‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں